قران پاک کی بے حرمتی کا دلخراش واقعہ، پاکستان میں تعینات نارویجن سفیر کی مذمت

 پاکستان نے گزشتہ روز نارویجن سفیر کو دفتر خارجہ طلب کرکے انھیں واقعے کیخلاف شدید احتجاج ریکارڈ کرتے ہوئے مسلمانوں کے جذبات سے آگاہ کیا گیا تھا۔

دفتر خارجہ طلبی کے بعد ٹویٹر پار جاری اپنے بیان میں ناروے کے سفیر کا کہنا تھا کہ ان کی حکومت واقعہ کی شدید مذمت کرتی ہے۔ ہمارے ملک میں ہر شخص کو آزادانہ بات کرنے اور اپنے مذہب کے مطابق زندگی گزارنے کی اجازت ہے۔ انہوں نے کہا کہ پولیس نے سیکیورٹی صورتحال کی وجہ سے مظاہرے کو روکا۔

پاکستان نے نارویجن حکومت سے ذمہ داروں کو کٹہرے میں لانے کا مطالبہ بھی کیا۔ سفیر کو بتایا گیا کہ بے حرمتی سے مسلمانوں کے جذبات کو ٹھیس پہنچی۔ پاکستان نے اوسلو میں اپنے سفیر کو بھی ہدایات دی ہیں کہ ناروے حکومت کو پاکستان کے تحفظات سے آگاہ کیا جائے۔

یاد رہے کہ ناروے کے شہر کریستیان سان میں اسلام مخالف انتہا پسند تنظیم نے مسلمانوں کے مقدسات کی سرعام توہین کی کوشش کی تو وہاں موجود مسلم جوان الیاس نے شجاعت کی داستان رقم کر دی۔

مسلمان نوجوان نے جان کی پروا کئے بغیر رکاوٹیں عبور کیں، پولیس کا حصار توڑا اور ملعون شخص کو دبوچنے کے لئے پہنچ گیا جسے پولیس نے گرفتار کرلیا۔

Please follow and like us:

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

error

Share with the world

RSS
Follow by Email
LinkedIn
Share